پاکستانی شہریت کی تنسیخ

اکیس سال سے زائد عمر کے درخواست گذاروں کے لئے ہدایات

جرمن حکام کی طرف سے جرمن شہریت دینے کی گارنٹی (Einbuergerungszusicherung) ملنے کے بعد21سال یا اس سے زیادہ عمر کے پاکستانی شہری پاکستانی شہریت کی تنسیخ کے لئے صرف ذاتی حیثیت میں درخواست دے سکتے ہیں۔ در خواست جمع کرانے کے لئے مندرجہ ذیل دستاویزات،جو نمبر ” الف” سے” ح” پر بیان کی گئی ہیں، کا مجموعہ ترتیب دیا جائے، اور اس کی دو فوٹوکاپیاں کی جائیں۔ اس طرح مرتب پانے والے ٹوٹل تین مجموعے،یعنی ایک اصل سیٹ اور اسکی دو کاپیاں قونصلیٹ کے کاٗو نٹر پر جمع کرائیں۔
دستاویزات
لف۔ فارم
فارم X” ” کمپیوٹر سے پر کیا گیا ہو اور نوٹار سے تصدیق شدہ ہو۔ (فارم X” ” پر اپنا موبائل نمبر اور ای میل ضرور لکھیں تاکہ بوقت ضرورت آپ سے رابطہ کیا جا سکے۔(
ب۔ کمپیوٹر فارم
کمپیوٹر فارم کمپیوٹر سے پر کیا گیا ہو(بالخصوص اس فارم کا سیریل نمبر۴ تا ۴۱ پر کیا گیا ہو)۔
ج۔ تصاویر
چھ عدد پاسپورٹ سائزرنگین تصاویر سفید یا ہلکے نیلے پس منظر کے ساتھ۔
د۔ جرمن شہریت کا خط
جرمن حکام کی طرف سے جرمن شہریت دینے کی گارنٹی Einbuergerungszusicherung)) اوراسکا اصل مصدقہ انگلش ترجمہ۔
ہ۔ پاسپورٹ
موجودہ ((Valid پاکستانی پاسپورٹ کے صفحہ ایک اور دو کی کاپی۔
گذشتہ ختم شدہ تمام اصل پاکستانی پاسپورٹ بمعہ صفحہ ایک اور دو کی فوٹو کاپی۔ اصل پاسپورٹ نہ ہونے کی صورت میں پاسپورٹ کی گمشدگی کی اصل پولیس رپورٹ، بمعہ انگریزی ترجمہ، جس پر گمشدہ پاسپورٹ کا نمبردرج ہو۔
و۔ پاکستانی شناختی کارڈ
پاکستانی شناختی کارڈ/نائیکوپ/چائلڈ رجسٹریشن سرٹیفیکیٹ کی فوٹو کاپی۔اٹھارہ سال سے کم عمر بچوں کے شناختی کارڈ نہ ہونے کی صورت میں نادرا سے جاری کردہ فارم ب کی فوٹو کاپی۔
ز۔ جرمنی کا ریزیڈینس پرمٹ
جرمنی میں قانونی سکونت کے اجازت نامہ یعنی Residence Permit کی کاپی۔
ح۔ ضامن کی تفصیلات
ایک سادہ کاغذ پر تحریر کردہ پاکستان میں مقیم دو رشتہ داروں کے مکمل نام، مکمل پتہ، اور ٹیلیفون نمبر جن سے درخواست گذار سے متعلق معلومات لی جا سکیں۔

پہلے سے جرمن شہریت کے حامل افراد کی پاکستانی شہریت کی تنسیخ

جن درخواست گذاروں کے پاس پہلے سے ہی جرمن شہریت ہے اور وہ پاکستانی شہریت کی تنسیخ کروانا چاہتے ہیں وہ مندرجہ ذیل کاغذات جمع کرائیں۔
۔ فارم X” ” کمپیوٹر سے پر کیا گیا ہو اور نوٹار سے تصدیق شدہ ہو۔ (فارم X” ” پر اپنا موبائل نمبر اور ای میل ضرور لکھیں تاکہ بوقت ضرورت آپ سے رابطہ کیا جا سکے۔(
۔ کمپیوٹر فارم کمپیوٹر سے پر کیا گیا ہو(بالخصوص اس فارم کا سیریل نمبر۴ تا ۴۱ پر کیا گیا ہو)۔
۔ چھ عدد پاسپورٹ سائزرنگین تصاویر سفید یا ہلکے نیلے پس منظر کے ساتھ۔
۔ جرمن شہریت کی نیچرلائزیشن کے سرٹیفیکیٹ Einbürgerungsurkunde کی کاپی اور اس کا اصل مصدقہ انگلش ترجمہ۔
۔ جرمن پاسپورٹ کی کاپی۔
۔ جرمنی کے شناختی کارڈیعنی Personalausweis کی کاپی۔
۔ جن درخواست گذاروں کے پاس پاکستانی شناختی کارڈ اور پاسپورٹ نہیں ہے وہ انکی عدم موجودگی سے متعلق جرمن نوٹار سے تصدیق شدہ اصل اقرار نامہ جمع کرائیں۔
۔ ایک سادہ کاغذ پر تحریر کردہ پاکستان میں مقیم دو رشتہ داروں کے مکمل نام، مکمل پتہ، اور ٹیلیفون نمبر جن سے درخواست گذار سے متعلق معلومات لی جا سکیں۔
فیس سے متعلق معلومات
۱۔ پاکستانی شہریت کی تنسیخ کی 15 یوروفیس قونصلیٹ کے استقبالیہ پرموجود ٹرمینل پر EC کارڈ کے ذریعے خود جمع کرائی جا سکتی ہے تاہم اس صورت میں ایک یورو بینک سروس چارجز لئے جائیں گے۔
۲۔ فیس نیشنل بینک آف پاکستان فرینکفرٹ میں بھی جمع کرائی جا سکتی ہے۔ بینک کا پتہ مندرجہ ذیل ہے۔
Holzgraben 31, 60313 Frankfurt am Main
۳۔ بینک میں فیس جمع کرانے کے لئے اکاٗونٹ کی تفصیلا ت مندرجہ ذیل ہیں۔

اکاؤنٹ نمبر
89091110
ایبان نمبر (BANٰI)
DE30501300000089091110
بی ایل زیڈ (BLZ)
50130000
بی آئی سی (BIC)
NBPADEFFXXX

۔بینک میں فیس جمع کرانے کی صورت میں اصل رسید جس پر بینک کی اصل مہر کندہ ہو بمع دو عدد فوٹو کاپیاں فارم کے ساتھ جمع کرائیں۔
۔درخواست گذاروں سے گذارش ہے کہ پوری فیس درست اکاوٗنٹ میں جمع کرائیں۔
۔ فیس ناقابل واپسی ہے۔

بچوں کی شہریت کی تنسیخ سے متعلق معلومات

اکیس سال سے کم عمر بچوں کی پاکستانی شہریت کی تنسیخ کے لئے مندرجہ ذیل ہدایات کو ملحوظ خاطر رکھیں۔
الف۔ بچوں کے پاس جرمن حکام کی جانب سے جرمن شہریت دینے کا خط یا جرمن پاسپورٹ موجود ہو۔
ب۔ بچے اپنے والدین کے ساتھ رہائیش پذیر ہوں۔
ج۔ اکیس سال سے کم عمر کے بچے اپنی ذاتی حیثیت میں پاکستانی شہریت کی تنسیخ کی درخواست جمع نہیں کرا سکتے۔
د۔ اکیس سال سے کم عمر بچے والدہ کے فارم کے ساتھ بھی اپنی پاکستانی شہریت کی تنسیخ کی درخواست جمع نہیں کراسکتے۔
ہ۔ اکیس سال سے کم عمر بچے صرف اپنے والد کے فارم کے ساتھ ہی اپنی پاکستانی شہریت کی تنسیخ کی درخواست جمع کرا سکتے ہیں۔ اس صورت میں ان تمام بچوں کے نام جن کی پاکستانی شہریت منسوخ کرانی ہے ان کے نام والد کے فارم میں درج کریں اور فی بچہ مندرجہ ذیل کاغذات جمع کرائیں۔
۔ بچہ کے پاکستانی شناختی کارڈکی دو کاپیاں۔
۔نادرا سے جاری شدہ برتھ رجسٹریشن سرٹیفیکیٹ یا فیملی رجسٹریشن سرٹیفیکیٹ۔
۔بچہ کی جرمنی میں قانونی سکونت کے اجازت نامہ یا جرمن شناختی کارڈ یا جرمن پاسپور ٹ کی کاپی، یعنی
(German passport / Residence Permit / Personalausweis)
۔ بچہ کے بین الا قوامی پیدائشی سرٹیفیکیٹ کی دو عدد فوٹو کاپیاں۔
۔ بچہ کی چھ عدد پاسپورٹ سائزحالیہ تصاویر سفید پس منظر کے ساتھ۔
۔ فی بچہ5 یورو فیس مندرجہ بالا معلومات کے مطابق جمع کرائیں۔

شہریت کی تنسیخ کے سرٹیفیکیٹ کا اجراء

شہریت کی تنسیخ کے سرٹیفیکیٹ ڈائریکٹوریٹ جنرل آف امیگریشن اینڈ پاسپورٹ اسلام آباد سے جاری کئے جاتے ہیں۔ یہ عمل آن لائن نہیں ہے۔ درخواست جمع کرانے سے لیکران سرٹیفیکیٹ کی تیاری اور قونصلیٹ میں وصولی میں کم از کم تین سے چار مہینے لگ سکتے ہیں۔ یہ مدت اس وقت زیادہ ہو سکتی ہے جب ڈائریکٹوریٹ جنرل آف امیگریشن اینڈ پاسپورٹ اسلام آبادکے حکام کو مزید معلومات درکار ہوں۔ اس صورت میں درخواست گذاروں سے معلومات لیکر متعلقہ حکام کو بھیج دی جاتی ہیں۔ درخواست گذار اپنی درخواست کا سٹیٹس قونصلیٹ کی ویب سائٹ ذیل میں دیے گئے لنک پر چار ہندسوں پر مشتمل نمبر ڈال کر معلوم کر سکتے ہیں۔

Renunciation Tracking


یہ نمبر درخواست جمع کراتے وقت رسید پر کیس نمبر کے آخر میں لکھا جاتا ہے۔ یاد رکھیں کہ درخواست کا سٹیٹس اس وقت تبدیل کیا جاتا ہے جب شہریت کی تنسیخ کا سرٹیفیکیٹ قونصلیٹ میں وصول ہو جاتا ہے۔ درخواست گذار جب اس بات کا اطمینان کر لیں کہ سرٹیفیکیٹ قونصلیٹ میں وصول ہو چکا ہے تو دفتر میں خود آ کر اپنے اصل شناختی کارڈ اور اس کی نادرا کی جاری شدہ تنسیخ کی رسید، بمع اصل پاکستانی پاسپورٹ کے یا دیگر کاغذات جو مطلوب ہوں،پیش کر کے وصول کر سکتے ہیں۔
شناختی کارڈ کی تنسیخ
شناختی کارڈ کی تنسیخ کے لئے درخواست گذار براہ راست نادرا کی ویب سائٹ سے رجوع کر سکتے ہیں۔ ویب سائٹ کا لنک مندرجہ ذیل ہے:۔
https://id.nadra.gov.pk/identity-documents/identity-cancellation/

شہریت کی تنسیخ نا قا بل واپسی نوعیت
پاکستانی شہریت اگر ایک دفعہ منسوخ کروا دی جائے تو واپس نہیں لی جا سکتی۔
٭٭٭٭٭

بتاریخ۸ فروری ۲۲۰۲ء